Sunday, July 21, 2024
Top News1972 کے بعد امریکا دوبارہ چاند پر پہنچ گیا، نجی خلائی جہاز...

1972 کے بعد امریکا دوبارہ چاند پر پہنچ گیا، نجی خلائی جہاز کی کامیاب لینڈنگ

1972 کے بعد امریکا دوبارہ چاند پر پہنچ گیا، نجی خلائی جہاز کی کامیاب لینڈنگ

اردو انٹرنیشنل (مانیٹرنگ ڈیسک) 1972 کے بعد امریکا 52 سال بعد چاند پر دوبارہ پہنچ گیا، امریکی نجی کمپنی کے خلائی جہاز نے کامیابی کے ساتھ چاند پر لینڈنگ کردی، روبوٹک خلائی جہاز سے سگنل بھی موصول ہوگئے۔

نصف صدی سے زائد عرصے بعد پہلی بار امریکی نجی کمپنی کے خلائی مشن نے چاند پر کامیاب لینڈنگ کرکے تاریخ رقم کردی۔ امریکی نجی کمپنی انٹیوٹوو مشین (Intuitive Machines) کا اوڈیسیئس (Odysseus ) نامی خلائی جہاز نے چاند کے قطب جنوبی کے قریب لینڈنگ کی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق نجی خلائی جہاز کو چاند پر لینڈنگ سے قبل دشواری کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ خلائی جہاز اور زمین پر موجود کنٹرول روم سے رابطہ منقطع ہوچکا تھا۔ چاند کے قطب جنوبی سے تقریباً 186 میل کے فاصلے پر رابطہ منقطع ہوا، اور لینڈنگ کے بعد سگنل موصول نہ ہوئے۔

رابطہ قائم کرنے میں تاخیر کے بعد آخر کار برطانیہ میں موجود ایک کمیونیکیشن انٹینا کے ذریعے سگنل اٹھایا گیا، اور اس خدشے کو مسترد کر دیا گیا کہ خلائی جہاز ٹچ ڈاؤن ہو چکا ہے۔

مشن ڈائریکٹر ٹم کرین نے فلائٹ کنٹرول ٹیم کو بتایا کہ ہمارا خلائی جہاز بلا شبہ چاند کی سرزمین پر ہے اور اس کی تصدیق ہو چکی ہے، اور چاند کی سطح پر سامان منتقل کیا جا رہا ہے۔

انٹیوٹوو مشین 50 سال بعد تاریخ رقم کرتے ہوئے چاند پر اترنے والی پہلی نجی کمپنی بن گئی ہے، آخری بار 1972 میں اپولو مشن کے دوران امریکی ہارڈویئر چاند کی سرزمین پر اترا تھا۔

ناسا کے ایڈمنسٹریٹر بل نیلسن نے انٹیوٹوو میشن، اسپیس ایکس کو فالکن 9 راکٹ کے لیے مبارکباد دی، جس نے اوڈیسئس کو گزشتہ ہفتے کینیڈی اسپیس سینٹر سے لانچ کیا تھا۔

چاند پر کامیاب لینڈنگ کی خبر سن کر کمپنی کے عملے نے خوشی کا اظہار کیا اور تالیاں بجائیں۔

اوڈیسی خلائی جہاز مقامی وقت کے مطابق رات 11 بجکر 23 منٹ پر پر چاند پر لینڈنگ کی تھی، ابتدائی طور پر خلائی جہاز کی طرف سے کوئی سگنل نہیں موصول ہوا تھا، تاہم تھوڑی دیر کے بعد ہی ایک مواصلاتی لنک قائم کیا گیا تھا۔

اوڈیسیئس نامی روبوٹک خلائی جہاز چاند نے جنوبی قطب پر کامیاب لینڈنگ کی ہے جہاں سائنسدانوں کا خیال ہے کہ یہاں پانی کا کوئی ذریعہ ہو سکتا ہے۔

یہ دوسرا کمرشل مشن ہے جسے امریکی خلائی ایجنسی ناسا نے مالی اعانت فراہم کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج نصف صدی سے زائد عرصے میں پہلی بار، امریکا چاند پر واپس آیا ہے۔ انسانیت کی تاریخ میں پہلی بار، ایک نجی امریکی تجارتی کمپنی نے وہاں تک سفر کا آغاز کیا اور اس کی قیادت کی۔ یہ سفر ناسا کی تجارتی شراکت داری کی طاقت اور وعدے کو ظاہر کرتا ہے۔

یاد رے اوڈیسی خلائی جہاز نے مقامی وقت کے مطابق رات 11 بجکر 23 منٹ پر چاند پر لینڈنگ کی، ابتدائی طور پر خلائی جہاز کی طرف سے کوئی سگنل نہیں موصول ہوا تھا، تاہم تھوڑی دیر کے بعد ہی ایک مواصلاتی لنک قائم کیا گیا تھا۔

اوڈیسیئس نامی روبوٹک خلائی جہاز چاند نے جنوبی قطب پر کامیاب لینڈنگ کی ہے جہاں سائنسدانوں کا خیال ہے کہ یہاں پانی کا کوئی ذریعہ ہو سکتا ہے۔ یہ دوسرا کمرشل مشن ہے جسے امریکی خلائی ایجنسی ناسا نے مالی اعانت فراہم کی ہے۔

واضح رہے اس سے قبل کوئی بھی نجی کمپنی چاند پر اپنا خلائی جہاز اتارنے میں کامیاب نہیں ہو سکی ہے۔ تاہم بہت سے ممالک کی سرکاری خلائی ایجنسیاں اپنے اپنے مشن کامیابی سے چاند پر اتار چکی ہیں۔

دیگر خبریں

Trending